School Reopening news in pakistan 582

شفقت محمود نے نویں سے بارہویں جماعت تک کلاسیں بحال کرنے کا اعلان کر دیا

شفقت محمود نے نویں سے بارہویں جماعت تک کلاسیں بحال کرنے کا اعلان کر دیا جانیے کس تاریخ سے اسکول اور کالج کھل رہے ہے
وفاقی وزیر تعلیم شفقت محمود نے نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر کے اجلاس کے بعد پریس کانفرنس میں کہا کہ این سی او سی کے اجلاس میں مشاورت کے بعد فیصلہ کیا گیا ہے کہ متاثرہ اضلاع میں 28 اپریل تک کلاس ون سے آٹھویں جماعت تک کلاسیں نہیں ہوں گی۔

انہوں نے کہا کہ 19 اپریل سے نویں سے بارہویں جماعت تک سخت ایس او پیز کے ساتھ کلاسیں بحال ہوں گی۔

اردو نیوز کے مطابق نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن کی جانب سے جاری کیے گئے اعداد و شمار کے مطابق پاکستان میں گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران کورونا وائرس سے 103 افراد ہلاک ہو گئے ہیں۔

یاد رہے کہ پنجاب کے مخصوص اضلاع میں 11 اپریل تک تمام تعلیمی ادارے بند ہیں۔ پہلے امتحانات دینے کی اجازت دی گئی تھی تاہم کورونا کی شدت میں تیزی کے بعد یہ فیصلہ بھی بدل دیا گیا۔

وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں شیڈول امتحانات لینے کی اجازت دی گئی تاہم 24 مارچ کے بعد ہونے والے امتحانات یہاں تک کہ بقیہ پرچے بھی ملتوی کر دیے گئے۔

سندھ حکومت کی جانب سے کراچی سمیت صوبے بھر میں پہلی سے آٹھویں جماعت تک سکولوں کو 15 روز کے لیے بند کرنے کا حکم دیا گیا ہے۔ فیصلے کا اطلاق سرکاری اور نجی سکولوں پر ہوگا۔

اس دوران آن کیمپس کلاسز معطل رہیں گی۔ بچوں کی تعلیم کو آن لائن، ہوم ورک اور دیگر ذرائع سے جاری رکھا جا سکتا ہے۔
اس سے قبل بروز ہفتہ 3 اپریل کو صوبائی وزیر تعلیم سندھ سعید غنی کی جانب سے ہونے والے محکمہ تعلیم کی سٹیئرنگ کمیٹی میں رمضان سے متعلق نیا ٹائم ٹیبل جاری کیا گیا۔

فیصلے کے مطابق صبح کی شفٹ والے سکول 7:30 سے 11:30 تک ہوں گے جبکہ دوسری شفٹ 11:45 سے 02:45 تک ہوا کرے گی۔
جمعہ والے روز صبح کی شفٹ والے سکولوں کے اوقات 7:30 سے صبح 10:30 بجے اور دوپہر کی شفٹ 10:45 سے دوپہر 1:15 تک ہوگی۔

خیبرپختونخوا حکومت نے کورونا وائرس کے کیسز میں اضافے کے باعث صوبے کے چھ اضلاع میں تعلیمی ادارے 11 اپریل تک بند کر رکھے ہیں۔

دوسری جانب بلوچستان میں تمام تعلیمی ادارے کھلے رکھنے کا فیصلہ کیا گیا۔ محکمہ تعلیم اور محکمہ صحت بلوچستان نے صوبے میں تعلیمی ادارے بند نہ کرنے پر متفق فیصلہ کیا ہے۔

پرائیویٹ سکولز ایسوسی ایشن کی جانب سے سکولوں کی بندش کے فیصلے کے خلاف احتجاج کیا جا رہا ہے۔ ایسوسی ایشن کا موقف ہے کہ جب باقی سیکٹرز کھولے رکھے ہیں تو سکول بند کر کے طلبا کا تعلیمی نقصان کیوں کیا جا رہا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں